میونسپل پبلک لائبریری شیخوپورہ کا مسلمان خاکروب رانجھا اپنی زندگی سے تنگ آ گیا

شیخوپورہ (عدنان غفار سے)محکمہ ایجوکیشن شیخوپورہ کی جانب سے گذشتہ11ماہ سے تنخواہ نہ ملنے پر مسلمان خاکروب رانجھا اپنی زندگی سے تنگ آ گیا۔ تفصیلات کیمطابق کمپنی باغ شیخوپورہ میں قائم میونسپل پبلک لائبریری میں گذشتہ 14سال سے خاکروب سینٹری ورکر کے طور پر کام کرنے والے اس محنت کش کا نام رانجھا ہے جسےگذشتہ 11ماہ سے تنخواہ نہیں دی گئی۔ اس پبلک لائبریری کے تمام عملے کی تنخواہیں محکمہ تعلیم ادا کرتا ہے۔محکمہ تعلیم کے دفتر کے کئی چکر لگانے کے باوجود اس کی بات نہیں سنی گئی۔ یہ محنت کش 4بچوں کا باپ ہے۔ جن میں 3بیٹیاں اور ایک بیٹا شامل ہے۔ اسکی بڑی بیٹی فرسٹ ائیر کی طالبہ ہے۔ عید آنے کو ہے مگر یہ خاندان فاقہ کشی پر مجبور ہے۔ بچوں کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے۔ گھر میں راشن بھی نہیں۔ بچوں کیلئے عید پر کپڑے خریدنے کی بھی سکت نہیں۔ لائبریری انتظامیہ کیمطابق ہر بار اسکی تنخواہ کی رپورٹ بنا کر بھیجی جاتی ہے مگر گذشتہ 11ماہ سے محکمہ ایجوکیشن نے اسکی تنخواہ جاری نہیں کی۔ رانجھا محکمہ تعلیم کے اس ظلم سے سخت پریشان ہے اور زندگی سے مایوس ہو چکا ہے۔ آخر کب تک ایسے غریب اور مجبور لوگ ظالم اور جابر افسران کے ظلم کی چکی میں پستے رہیں گے؟ ارباب ِ اختیار سے اپیل ہے کہ اس غریب کے مسئلے کو حل کروائیں تاکہ یہ بھی عید کی خوشیاں منا سکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *